شکایت رجسٹریشن





کيا آپ ایک موجودہ صارف ہیں

براہ مہربانی آپشن منتخب کریں
شکایتمشورہ

شکایت کی نوعیت

قرضڈپازٹساکاؤنٹ کی بحالیانشورنسترسیلات زرکاؤنٹر کے معاملاتسارفین کی خدماتجنرلای بینکنگاےٹی ایم/ڈیبٹ کارڈ

: تفصیل

Please Write Correct Answer : + 5 = 6


ایک صارف کوئی شکایت ایف ایم ایف بی کے سنٹرل شکایات مینجمنٹ یونٹ میں بھی درج کراسکتا ہے۔

  • سرفیس میل:

مینیجر شکایات مینجمنٹ یونٹ۔ پہلی مائکرو فنانس بینک لمیٹڈ 17 واں فلور ایچ بی ایل ٹاور ، بلیو ایریا ، اسلام آباد۔

  • ہمیں ای میل کریں: [email protected]
  • ویب سائٹ: https://www.fmfb.pk/complaints
  • فیکس: 2821817 (051) 92+
  • شکایت باکس: شکایت چھوڑنے کے لئے تمام ایف ایم ایف بی شاخوں / اے ٹی ایم میں دستیاب ہے
  • فرسٹ ٹچ بینکنگ: ایف ایم ایف بی موبائل ایپلیکیشن آپ کو شکایت درج کرنے کی اجازت دیتی ہے۔
  • رابطہ سینٹر: 34778(FIRST)-0800

سرمایہ کاروں کی شکایات درج کی جاسکتی ہیں www.secp.gov.pk/ComplaintForm1.asp

شکایات نپٹانے کا عمل/طریقہ کار

  • تمام شکایات خواہ وہ کسی بھی چینل سے موصول ہوں، بینک کے خودکار شکایت منیجمنٹ سسٹم (CMS) میں ڈال دی جاتی ہیں۔
  • یہ سسٹم خودکار طریقے سے ایک ایس ایم ایس شکایت کنندہ کے دیے گئے موبائل نمبر پر بھیج دیتا ہے۔ اس ایس ایم ایس میں درج کروائی گئی شکایت کا ٹریکنگ نمبر اور شکایت دور کیے جانے کا متوقع وقت درج ہوتا ہے۔
  • اگر دس ایام کار میں شکایت دور نہیں ہوتی تومناسب چینل کے ذریعے شکایت کنندہ کو ایک عبوری جواب ارسال کر دیا جاتا ہے۔
  • شکایت یونٹ متعلقہ ڈپارٹمنٹ کی طرف سے مہیا کیے گئے شکایت کے ازالے کا جائزہ لیتا ہے اور مطمئن ہونے کی صورت میں شکایت کنندہ کو مناسب چینل کے ذریعے شکایت کی دوری کی اطلاع دی جاتی ہے۔
  • تمام شکایات کی جانچ پڑتال فوری، منصفانہ اور غیر جانبدارانہ طریقے سے کی جاتی ہے۔

CFC – فوکل افراد

سید عبداللہ شاہ گیانی ( آفیسر – اے ٹی ایم آپریشنز) 03325122194

بلال عرفان (یونٹ ہیڈ – ڈی ایف آئی اور ٹیکنالوجی آپریشنز) 03002444234

ڈس کلیمر:

“اگر آپ کی شکایت کو بینک نے مناسب طریقے سے حل نہیں کیا تو آپ اپنی یہ شکایت کو سکیورٹی اور ایکسچینج کمیشن آف پاکستانSECP پر بھی کر سکتے ہیں تا ہم شکایت کرتے وقت اس بات کا خیال رکھیں کہ SECP صرف ان شکایات پہ نظر ثانی کرے گا جن کو حل کرنے کی درخواست کی گئی ہو اور بینک ان کو حل کرنے میں کامیاب نہ ہوا ہو اس کے علاوہ SECP ان شکایات کو حل کرنے کا مجاز نہیں جو اس کی (ریگولیٹری ڈومین) دائرہ اختیار اور استحقاق میں نہ ہو۔ ”